شہباز شریف کے اثاثے منجمد کرنے کے نیب احکامات کے بعد حکومت اور ن لیگ آمنے سامنے۔۔۔احسن اقبال کا سخت موقف نے حکومتی حلقوں میں کھلبلی مچا دی

مسلم لیگ (ن) کے رہنما احسن اقبال نے شہباز شریف کے اثاثے منجمد کرنے کے نیب احکامات پر کہا ہے کہ جن اثاثوں کو شہباز شریف نے ڈکلیئر کیا ہوا ہے انہیں سیل کرنا زیادتی ہے۔

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال کا کہنا تھا کہ حکومت مسلم لیگ ن پر منی لانڈرنگ، کرپشن کا ایک بھی الزام ثابت نہیں کرپائی اور اس طرح شہباز شریف کے اثاثے منجمد کرنا ٹھیک نہیں ہے۔

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ ماڈل ٹاؤن کی پراپرٹی تو شہباز شریف کو وراثت میں ملی ہے جب کہ جن پراپرٹیز کو شہباز شریف نے ڈکلیئر کیا ہوا ہے انہیں سیل کرنا زیادتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت سنجیدہ ہوتی تو اپوزیشن کے ساتھ تدبر کا رویہ اپناتی لیکن حکومت محاذ آرائی بڑھانا چاہتی ہے۔

حکومت پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے احسن اقبال کا کہنا تھا کہ حکومت قومی اداروں کے ساتھ خطرناک کھیل کھیل رہی ہے، وہ ملک میں سیاسی درجہ حرارت بڑھانا چاہتی ہے۔

آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کیس سے متعلق احسن اقبال نے کہا کہ حکومت سپریم کورٹ کے فیصلے کو سبوتاژ کرناچاہتی ہے، مجھے ان کی نیت پر شک ہے یہ آرمی چیف کے نوٹس کے ساتھ کھیل کھیل رہی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں