آزاد کشمیر سمیت پنجاب، خیبرپختونخوا میں شدید زلزلہ، 4 افراد جاں بحق 100 سے زیادہ زخمی

اسلام آباد اور آزاد کشمیر سمیت ملک کے مختلف علاقوں میں زلزلے سے کم از کم 4 افراد جاں بحق جب کہ 100 زیادہ افراد زخمی ہو گئے ہیں۔

زلزلہ پیما مرکز کے مطابق زلزلے کی شدت 5.8 ریکارڈ کی گئی اور اس کا مرکز جہلم سے 5 کلو میٹر شمال کی طرف تھا جب کہ گہرائی زیر زمین 9 کلو میٹر تھی۔

زمین میں گہرائی کم ہونے کی وجہ سے قریبی علاقوں میں زیادہ نقصانات کا خدشہ ہے۔

سہ پہر 4 بج کر 2 منٹ آنے والے زلزلے سے سب سے زیادہ تباہی کے اطلاعات آزاد کشمیر کے علاقے میرپور سے ملی ہیں جہاں متعدد گھروں کو نقصان پہنچا ہے اور 80 افراد زخمی ہوئے جنہیں اسپتال منتقل کر دیا گیا۔

زرائع کے مطابق زخمیوں میں سے 4 افراد دم توڑ گئے ہیں جب کہ سڑکیں تباہ ہونے کے باعث کئی علاقوں سے زخمیوں کو اسپتالوں تک پہنچانے میں دشواری کا سامنا ہے۔

میرپور کے علاقے جاتلاں سے موصول ہونے والی ویڈیوز اور تصاویر میں شدید تباہی کے مناظر کو دیکھا جا سکتا ہے۔ وہاں پر متعدد سڑکوں میں بڑے بڑے شگاف پڑ گئے ہیں اور متعدد گاڑیاں ان میں الٹ گئی ہیں۔

ڈپٹی کمشنر میر پور آزاد کشمیر راجہ قیصر نے زلزلے نتیجے میں ایک خاتون کی بھی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ بڑی تعداد میں لوگ زخمی بھی ہیں تاہم ان کی تعداد کے بارے میں حتمی طور پر کچھ نہیں کہا جاسکتا۔

راجہ قیصر کا کہناتھا کہ این ڈی ایم اے اور پی ڈی ایم اے اور دیگر ریسکیواداروں نے اپنا کام شروع کردیا ہے اور نقصانات کے حوالے سے معلومات اکٹھی کی جارہی ہیں۔

 

زلزلے کی شدت 5.8 تھی، ڈپٹی ڈائریکٹر زلزلہ پیما مرکز

ادھر زلزلہ پیما مرکز کے ڈپٹی ڈائریکٹر نجیب احمد نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ریکٹر اسکیل پر زلزلے کی شدت 5.8 ریکارڈ کی گئی جبکہ اس کی گہرائی 10 کلو میٹر تھی۔

انہوں نے بتایا کہ زلزلے کا مرکز جہلم کے شمال میں 5کلو میٹر تھا اور یہ 4 بجکر ایک منٹ پر آیا اور اسے خیبرپختونخوا اور پنجاب کے علاقوں میں محسوس کیا گیا۔

ڈپٹی ڈائریکٹر کا کہنا تھا کہ لوگوں کو احتیاط کرنی چاہیے کیونکہ زلزلے کے آفٹرشاکس بھی آسکتے ہیں۔

آرمی چیف کی زلزلہ متاثرین کیلئے ریسکیو آپریشن کی ہدایت

زلزلے کے بعد ریسکو اداروں کے ساتھ ساتھ شہریوں نے اپنی مدد آپ کے تحت ایک دوسرے کی مدد کی جبکہ پاک فوج کے سربراہ کی جانب سے بھی سول انتظامیہ کی مدد کی ہدایات جاری کردی گئی۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ڈائریکٹر جنرل میجر جنرل آصف غفور نے ایک ٹوئٹ میں بتایا کہ ‘چیف آف آرمی اسٹاف نے آزاد جموں کشمیر میں زلزلے کے متاثرین کے لیے سول انتظامیہ کے ساتھ فوری طور پر ریسکیو آپریشن کی ہدایت کردی’۔

انہوں نے بتایا کہ طبی ٹیمیں اور ایوی ایشن کے ساتھ فوجی دستے فوری طور پر روانہ کردیے گئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں