جنوبی افریقن لڑکی کو پاکستانی لڑکے سے شادی کرنا مہنگا پڑگیا

جنوبی افریقن لڑکی کو پاکستانی لڑکے سے شادی کرنا مہنگا پڑگیا، لڑکی والدہ کی عیادت کے لئے اپنے وطن واپس جارہی تھی ائیرپورٹ حکام نے تمام سفری دستاویزات مکمل ہونے کے باوجود انہیں جہاز سے اتار دیا گیا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ تین برس بعد بیوی کو اس کی والدہ جو کے شدید علیل ہیں، اسے ملانے کے لئے ائیرپورٹ گئے تاہم سفری دستاویزات مکمل ہونے کےباوجود انہیں جہاز سے اتار دیا گیا۔

ذرائع کے مطابق عدالت نے ڈائریکٹر امیگریشن لاہور کو جواب سمیت ذاتی حیثیت میں آج طلب کر رکھا ہے، جسٹس مظاہرعلی اکبر نقوی نے کیس کی سماعت کریں گے۔

اس ضمن میں درخواست گزار افتخار شاہد نے عدالت میں دائر کی گئی درخواست مؤقف اپنایا ہے کہ امیگریشن حکام نے جنوبی افریقن لڑکی نذویرا احمد کو بورڈنگ کے باوجود آف لوڈ کردیا جو ان کے بنیادی حقوق کی خلاف ورزی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ نذویرا احمد نے پاکستانی لڑکے عبدالرحمن سے شادی کی جس کے بعد دونوں پاکستان آئے اور ان کے ہاں ایک بیٹا علی حیدر پیدا ہوا۔

درخواست گزار نے بتایا کہ عدالتی حکم کے باوجود وفاقی وزارت داخلہ نے بیوی کو پاکستانی شہریت نہیں دی۔

 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں