کسی صورت این آر او نہیں دوں گا، مولانا فضل الرحمن کی حکومت کو دو ٹوک پیغام، تفصیل جانیے اس خبر میں

جمعیت علماء اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کو کسی صورت این آر او نہیں دوں گا۔

ہم ٹی وی اور میڈیا کے تبصروں سے مرعوب نہیں ہونے والے،ہمارا کسی ادارے سے تصادم کا ارادہ نہیں ہے،آزادی مارچ پر امن ہو گا ،کوئی بھی مسلمان عقیدہ ختم نبوت ﷺ پر کسی قسم کی نرمی نہیں برت سکتا،جمعیت علماء اسلام ایک مضبوط سیاسی قوت ہے، اگر ہمارا راستہ روکا گیا تو کسی حکومت کو بھی چلنے نہیں دیں گے۔

لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن کا کہنا تھا کہہم ابھی آزادی مارچ کی تاریخ کا تعین نہیں کر سکے لیکن ایک دو روز میں آزادی مارچ کی تاریخ کا تعین ہو جائے گا ، امید ہے حزب اختلاف کی جماعتیں آزادی مارچ میں ہمارا ساتھ دیں گی،اگر کوئی ہمارا ساتھ نہیں بھی دے گا تو ہم اس سے پہلے بھی 15 ملین مارچ کر چکے ہیں اور یہ آزادی مارچ بھی اکیلے کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں-

ان کا مزید کہنا تھا دیگرسیاسی جماعتوں نے ہم سے جو معاہدہ کیا تھا،اُنہیں اس پر عمل کرنا چاہیے۔مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ آئین،اسلامی دفعات،بدامنی،مہنگائی اور عوام کے دیگر مسائل کیخلاف مارچ کر رہے ہیں،آزادی مارچ میں یہ سارے موضوعات آتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہمارا کسی بھی ادارے کیساتھ تصادم نہیں ہے،آزادی مارچ کے سلسلے میں عوام ہم سےبہت آگےہیں،کوئی بھی مسلمان عقیدہ ختم نبوتﷺ پر کسی قسم کی نرمی نہیں برت سکتا،ٹی وی کے پروپیگنڈوں کا شکار مت ہوں، یہ وقت استقامت کا متقاضی ہے،ہم ٹی وی اور میڈیا کے تبصروں سے مرعوب ہونے والے نہیں۔

انہوں نے کہا کہ جمعیت علماء اسلام ایک مضبوط سیاسی قوت ہے، اگر ہمارا راستہ روکا گیا تو کسی حکومت کو بھی چلنے نہیں دیں گے۔

 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں