پاکستانی خبریں

مخصوص نشستوں کے فیصلے تک قومی اسمبلی کا اجلاس نہیں ہوسکتا: بیرسٹر گوہر خان

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے رہنما بیرسٹر گوہر علی خان نے کہا ہے کہ مخصوص نشستوں کے فیصلے تک قومی اسمبلی کا اجلاس نہیں ہوسکتا۔ پی ٹی آئی امیدواروں نے آزاد حیثیت میں الیکشن لڑا، آزاد امیدواروں نے دو تہائی اکثریت حاصل کی۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بیرسٹر گوہر نے کہا کہ ہمارے 86 آزاد ارکان سنی اتحاد کونسل میں شامل ہوئے تھے، سندھ میں 9 آزاد ارکان قومی اسمبلی نے سنی اتحاد کونسل کو جوائن کیا ہے، ہماری کُل 227 سیٹیں بنتی ہیں، سنی اتحاد کونسل نے 4 درخواستیں الیکشن کمیشن کو دیں، الیکشن کمیشن نے 81 آزاد امیدواروں کو سنی اتحادکونسل میں شامل کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ پنجاب میں 107 ارکان صوبائی اسمبلی نے سنی اتحاد کونسل میں شمولیت اختیار کی، قانون میں موجود ہے آزاد امیدوار 3 روز کے اندر اندر کوئی بھی سیاسی جماعت جوائن کر سکتا ہے، مخصوص نشستوں کے فیصلے تک قومی اسمبلی کا اجلاس نہیں ہوسکتا۔

بیرسٹر گوہر نے کہا کہ الیکشن کمیشن کی کاز لسٹ میں کیس ہی نہیں تھا، کیس نہ ہونے کی وجہ سے سماعت کل تک ملتوی ہوئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ 8 فروری کو عوامی مینڈیٹ چھینا گیا، ہمیں ’بلا‘ نہیں دیا گیا، تمام آزاد امیدواران ہمارے تھے، پاکستان تحریک انصاف نے دو تہائی اکثریت حاصل کی ہے، عوام نے مینڈیٹ دیا ہے، الیکشن کمیشن بھی عوامی مینڈیٹ کو مدِنظر رکھتے ہوئے فیصلہ سنائے۔

Related Articles

Back to top button