بین الاقوامی

بنگلہ دیش کے سابق چیف جسٹس کو 5 کروڑ ڈالر کی کرپشن کے الزام میں 11 سال قید کی سزا

بنگلہ دیش کے سابق چیف جسٹس سریندر کمار سنہا کو 5 کروڑ ڈالر کی کرپشن کے الزام میں اس کی غیر حاضری میں 11 سال قید کی سزا سنا دی گئی۔

بنگلہ دیش کے سابق چیف جسٹس سریندر کمارسنہا نے 2017 میں یہ فیصلہ دیا تھا کہ پارلیمنٹ ججوں کو برطرف نہیں کر سکتی، اس اقدام کو وکلاء نے عدالتی آزادی کے تحفظ کے طور پر سراہا تھا۔
انہوں نے بھاری کرپشن کے بعد 2017 کے آخر میں بنگلہ دیش چھوڑ دیا اور الزام لگایا کہ انہیں تاریخی فیصلے کے بعد الگ ہونے پر مجبور کیا گیا تھا۔ وہ شمالی امریکہ میں رہائش پذیر ہو گیا جہاں اس نے مبینہ طور پر سیاسی پناہ کی درخواست کی ہے۔

بنگلہ حکومت نے اس کی کرپشن پہ کیس دائر کیا ڈھاکہ میں خصوصی جج کی عدالت کے جج شیخ نظم العالم نے منگل کو فیصلہ سنایا، جس میں سنہا کو منی لانڈرنگ کے جرم میں سات سال اور اعتماد کی خلاف ورزی پر چار سال قید کی سزا سنائی گئی۔

بنگلہ دیش میں”اس فیصلے نے ثابت کر دیا کہ ملک میں کوئی بھی قانون سے بالاتر نہیں ہے۔ غلط کام کسی کو بھی کٹہرے میں لائے گا۔

Related Articles

Back to top button