بین الاقوامی

جوبائیڈن کی چینی اور روسی صدور پر کڑی تنقید

جوبائیڈن نے چین اور روس کے صدور کی ماحولیاتی کانفرنس میں غیر حاضری پر انہیں کڑی تنقید کا نشانہ بنایا۔

امریکا کے صدر جوبائیڈن نے ماحولیاتی تبدیلیوں سے متعلق کانفرنس میں چینی اور روسی ہم منصب کے بذات خود شریک نہ ہونے پر شدید تنقید کرتےہوئے حیرت ظاہر کی کہ اتنا بڑا اشو ہونے کے باوجود دونوں ملکوں کےسربراہ کیسے راہ فرار اختیارکرسکتے ہیں۔

جوبائیڈن نے 120 ممالک کے رہنماؤں کی کانفرنس میں دونوں صدور کی غیرحاضری کو بڑی غلطی قراردیا۔

اس موقع پر امریکی صدر نے چین کے ساتھ رویہ نرم کرنے کی مشروط پیشکش کرتے ہوئےکہا کہ بیجنگ ماحولیاتی امور پر مزید اقدامات کے لیے تیار ہو تو امریکا چین کے معاملے پر نرم رویہ اختیار کرلے گا۔

گلاسگو کانفرنس میں 120 ممالک کے رہنماؤں نے عالمی درجہ حرارت میں اضافہ پیرس معاہدےکے تحت ایک اعشاریہ پانچ ڈگری سینٹی گریڈ تک محدود رکھنے کے طریقوں پر بات چیت کی ہے۔

تاہم چین اور روس کے صدر نے کانفرنس میں ذاتی طور پر شرکت کے بجائے ویڈیو لنک سے شرکت پر آمادگی ظاہرکی تھی۔

چین پچھلے برس تجویز پیش کرچکاہے کہ آلودگی کو 2060 تک صفرکردیاجائے تاہم اس کے نتیجے میں درجہ حرارت محدود کرنا دشوار ہوجائے گا۔

Related Articles

Back to top button