بین الاقوامی

امریکہ کو طالبان کی حکومت تسلیم کرنے کی کوئی جلدی نہیں ہے، وائٹ ہاؤس

ترجمان وائٹ ہاؤس نے کہا ہے کہ افغان فوج اور اشرف غنی امریکی توقعات پر پورا نہیں اترے۔غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق ترجمان وائٹ ہاؤس جین ساکی نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ قطر کے دارالحکومت دوحا میں امریکی سفارتی دفتر کھولا جا رہا ہے۔ امریکہ کو طالبان کی حکومت تسلیم کرنے کی کوئی جلدی نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ افغانستان سے نکلنے میں امریکیوں کو دوحا سے مدد فراہم کریں گے۔ امریکہ کو طالبان پر ہر سطح کی سبقت حاصل ہے، افغان فوج اور اشرف غنی امریکی توقعات پر پورا نہیں اترے۔

اس سے قبل امریکی صدر جو بائیڈن نے افغانستان سے فوجی انخلا کے بعد قوم سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کابل سے فوجیوں اور شہریوں کے خطرناک انخلا کا چیلنج پورا کیا۔

یہ بھی پڑھیں: انخلا منصوبہ بندی سے کیا، القاعدہ کی کمرتوڑ دی، چین و روس سے چیلنجز درپیش ہیں: بائیڈن

امریکی صدر کا کہنا تھا کہ 30 ہزار افغان فوجیوں کو 20 سال میں تربیت دی، افغان جنگ کے خاتمے کا فیصلہ میں نے کیا، کابل کی سیکیورٹی کے لیے 6 ہزار امریکی فوجیوں کی تعیناتی کی منظوری دی۔

Related Articles

Back to top button