بین الاقوامی

متحدہ عرب امارات کا کورونا سے نمٹنے کے ساتھ تعلیمی سلسلہ جاری رکھنے کے لئے اہم ترین فیصلہ

دبئی کی سپریم کمیٹی برائے کرائسز اینڈ ڈیزاسٹر مینجمنٹ نے اعلان کیا ہے کہ امارت میں پرائیویٹ اسکول رواں سال مکمل حاضری کے ساتھ تعلیمی سلسلہ شروع کریں گے، ساتھ ہی پرائیویٹ اسکول کے طلبا کو تعلیمی ادارے میں حاضر ہونے کے ساتھ گھر سے تعلیمی سلسلہ جاری رکھنے کی سہولت بھی فراہم کی جائے گی۔

یہ طریقہ کار رواں سال تین اکتوبر تک جاری رکھا جاسکتا ہے جس کے بعدتمام اسکول طلبا مکمل حاضری کے ساتھ اپنی تعلیم جاری رکھ سکیں گے۔

اس بات کا فیصلہ شیخ منصور بن محمد بن راشد المکتوم کی سربراہی میں سپریم کمیٹی کے اجلاس میں دبئی میں معمول کے کاروبار زندگی کی بحالی اور کووڈنائنٹین ویکسینیشن کی بلند شرح کے بعد کیاگیا ہے، کمیٹی نے والدین اور اسکول آپریٹرز کے ساتھ وسیع مشاورت کے بعد یہ فیصلہ کیا۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق تدریسی عملے میں ویکسینیشن کی چھیانوے فیصد اور بارہ سے سترہ سال کی عمر کے بچوں میں ستر فیصد ویکسینیشن کی شرح کو بھی سامنے رکھتے ہوئے یہ فیصلہ کیا گیا ہے۔

شیخ منصور بن محمد نے کہا کہ سپریم کمیٹی کا فیصلہ اعلی احتیاطی معیارات پر سمجھوتہ کیے بغیر وباسے بحالی میں تیزی لانے کی وسیع حکمت عملی کا حصہ ہے۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق کمیٹی نے اسکولوں کو اپنے احاطے میں احتیاطی تدابیر پر سخت عملدرآمد کے ساتھ مختلف سرگرمیوں کے انعقاد کی اجازت دینے کا بھی فیصلہ کیا ہے، کمیٹی نے کہا کہ حفاظتی پروٹوکول پر سختی سے عمل کرنے سے پرائیویٹ اسکولوں میں طلبا کی حاضری کے ساتھ تعلیم وتربیت کے سلسلہ کی کامیابی یقینی ہوگی۔

سپریم کمیٹی نے حکام کو ہدایت کی ہے کہ وہ دبئی کے تعلیمی شعبے سے وابستہ افراد کے ساتھ مل کر کام کریں تاکہ احتیاطی تدابیر اور ہیلتھ پروٹوکول کی ہم آہنگی کو یقینی بنایا جا سکے۔

Related Articles

Back to top button