بین الاقوامی

کویتی حکام کی تارکینِ وطن کے لیے ہیلتھ انشورنس قانون میں ترمیم

کویت میں تارکینِ وطن کے لیے ہیلتھ انشورنس قانون میں ترمیم کر دی گئی۔

کویت نے ریاست میں موجود اور کویت سے باہر پھنسے تارکینِ وطن کے لیے بیمہْ صحت میں تبدیلی کر دی ہے۔

اسسٹنٹ انڈر سیکریٹری برائے رہائشی امور میجر جنرل انور عبد اللطیف البرجس نے بتایا کہ آرٹیکل (18، 20 اور 22) کے طریقہ کار کے تحت آنے والے تارکینِ وطن کے لیے ہیلتھ انشورنس میں ترمیم کی گئی ہے۔

ترمیم کے مطابق کویت میں موجود رہائشیوں اور کویت سے باہر پھنسے ہوئے رہائشیوں کے لیے صحت انشورنس کی مدت مختلف ہوگی۔

یہ ترمیم وزارت صحت کے ضوابط کے مطابق سسٹمز اور ہیلتھ انشورنس ڈیپارٹمنٹ میں کی جائے گی، آرٹیکل 18 کے مطابق کویت میں موجود افراد کو 2 سال کی صحت کی انشورنس کی سہولت دی جائے گی، جب کہ کویت سے باہر والوں کو 1 سال کی مہلت دی جائے گی۔

کویت کے اندر آرٹیکل 20 کی توثیق میں 3 سال کی صحت کی انشورنس کی سہولت دی جائے گی، جب کہ کویت سے باہر والوں کو 1 سال کی مہلت دی جائے گی۔ آرٹیکل 22 پر تارکینِ وطن کو 2 سال کی صحت انشورنس دی جائے گی، اور کویت سے باہر والوں کو 1 سال کی مہلت دی جائے گی۔

Related Articles

Back to top button