بین الاقوامی

بھارت میں ہندو شرپسندوں کا بزرگ مسلمان شہری سے انسانیت سوزسلوک

بھارت میں بزرگ مسلمان شہری سے انسانیت سوزسلوک کی ویڈیو وائرل ہوگئی۔

72 سالہ عبدالصمد سیفی پر تشدد کا واقعہ ریاست اترپردیش کے علاقے غازی آباد میں پیش آیا۔

ویڈیو میں موجود افراد کو بزرگ مسلمان شہری پر ڈنڈوں اور ہاتھ سے تشدد کرنے کے بعد ان کی داڑھی کاٹتے دیکھا جاسکتا ہے۔

ویڈیو میں بزرگ کو ہندو انتہا پسندوں سے رحم کی بھیک مانگتے بھی دیکھا جاسکتا ہے جب کہ اس دوران ہندو انتہا پسندوں نے بزرگ سے زبردستی جے شری رام کے نعرے بھی لگوائے۔

غیر ملکی میڈیاکے مطابق واقعے کی ویڈیو سامنے آنے پر پولیس نے3 افراد کو گرفتارکرلیا۔

بعد ازاں سوشل میڈیا پر عبدالصمد کی ایک اور ویڈیو وائرل ہوئی جس میں ان کا کہنا تھا کہ میں لونی بارڈر سے نزدیک رکشے میں سفر کررہا تھا کہ مجھے 2 افراد کی جانب سے اغوا کرلیا گیا، وہ مجھے جنگل میں لے گئے جہاں انہوں نے مجھ پر تشدد شروع کردیا، میں نے ان سے رحم کی بھیک بھی مانگی لیکن انہوں نے مجھ سے پوچھا کہ کیا میں اللہ کا نام لے رہا ہوں ؟ جس کے بعد انہوں نے مجھ سے جے شری رام کے نعرے بھی لگوائے۔

دوسری جانب بزرگ شہری کی ویڈیو اور خبر لگانے پر سماجی رابطے کی ویب سائٹ پرفرقہ ورانہ جذبات بھڑکانے کا الزام لگاتے ہوئے مقدمہ درج کرلیا گیا۔

 

Related Articles

Back to top button