بین الاقوامی

افغانستان کا صوبہِ ہرات ایک بار پھر دھماکوں سے گونج اٹھا، سات افراد ہلاک اور کئی زخمی ہو گئے

افغانستان ایک بار پھر دھماکوں سے گونج اٹھا، صوبہ ہرات میں نامعلوم افراد کی جانب سے کار کو بم لگا کر اڑا دیا گیا، جس کے نتیجے میں7افراد کے ہلاک ہونے کی اطلاعات ہیں۔

افغانستان کے مغربی صوبے ہرات میں جمعے کے روز ہونے والے ایک کار بم دھماکے میں کم از کم سات افراد ہلاک اور 53 دیگر زخمی ہوگئے۔

ہرات کے گورنر سید عبدالواحد قتالی نے بتایا کہ دھماکے کے بعد درجنوں مکانات اور دکانیں تباہ ہوگئیں۔ ہلاک ہونے والوں میں عورتیں اور بچے شامل ہیں۔ امدادی کارکن ملبے میں دبے افراد کو بچانے کی کوشش کررہے ہیں۔

گوکہ کسی گروپ نے اس دھماکے کی ذمہ داری فی الحال قبول نہیں کی ہے تاہم مقامی حکام نے اس واقعے کا ذمہ دار طالبان کو ٹھہرایا ہے۔

یاد رہے کہ بنیاد پرست سنی طالبان نے تقریباً دوعشروں سے مغربی حمایت یافتہ افغان حکومت کے خلاف جنگ جاری رکھی ہوئی ہے۔

ہرات میں کار بم دھماکہ ایک ایسے وقت میں ہوا ہے جب روس نے افغانستان میں مستقبل کی عبوری حکومت میں طالبان کو شامل کرنے کی امریکی تجویز کی حمایت کرنے کا اعلان کیا ہے۔

عالمی طاقتیں افغانستان کے لیے ایک ایسے انتظام کی کوششیں کررہی ہیں جس سے جنگ زدہ ملک میں سکیورٹی کو یقینی بنایا جاسکے۔

Related Articles

Back to top button