مودی سرکار اپنے ہی شہریوں کے دشمن، کچی آبادی کے مکینوں کے ساتھ دھوکہ

مودی سرکار اپنے ہی شہریوں کے دشمن، کچی آبادی کے مکینوں کے ساتھ دھوکہ

بھارتی حکام نے اپنے ہی شہریوں کو چکما دیتے ہوئے کچی آبادی کے مکینوں پر دھوکے سے کوویڈ ویکسین کا تجربہ کیا۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق امریکی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ بھارت نے اپنی مقامی کوویڈ ویکسین کے کلینیکل ٹرائل میں قواعد کی خلاف ورزی کی اور غریب رہائشیوں کو کوویڈ ویکسین کا کہہ کر اُن پر کلینیکل تجربہ کر لیا۔

متاثرین کے مطابق انہیں کہا گیا کہ اگر ویکسین نہ لگوائی تو کورونا ہو جائے گا جس کے بدلے حکام کی جانب سے 750 روپے بھی دیے گئے۔ ویکسین پانے والے آدھے لوگ سمجھتے رہے کہ وہ کورونا وائرس سے محفوظ ہو گئے اور اُنہوں نے حفاظتی اقدامات کم کر دیے۔

واضح رہے کہ بھارت کو اس وقت بھی عالمی سطح پر خفت کا سامنا کرنا پڑا جب اس کی تیار کردہ کورونا ویکسین دنیا کا کوئی ملک مفت میں بھی لینے کو تیار نہیں ہوا۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق بھارت کی تیار کردہ انسداد کورونا وائرس کی ویکسین ’’کوواکسن‘‘ کی 8 لاکھ سے زائد خوراکیں جذبہ خیر سگالی کے طور پر میانمار، منگولیا، عمان، بحرین، فلپائن، مالدیپ اور ماریشیس کو بھیجی گئی تھی تاہم صرف میانمار نے 2 لاکھ خوراکیں رکھیں جبکہ دیگر ممالک نے خوراکیں لینے سے انکار کر دیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں