تہران: ایران نے بھارتی کمپنیوں کو کام سے روک دیا

ایران نے ملک میں ایک گیس فیلڈ منصوبے پر کام کرنے والی بھارتی کمپنیوں کو کام سے روک دیا، منصوبہ مقامی ایرانی کمپنیوں کو دیا جا رہا ہے۔

مقامی میڈیا رپورٹ کے مطابق ایران نے ایک بہت بڑے گیس فیلڈ منصوبے پر کام کرنے والی بھارتی کمپنیوں کو کام سے روک دیا ہے۔ بھارتی کمپنیوں کے کنسورشیم کو نوٹس جاری کیا گیا ہے کہ منصوبہ مقامی ایرانی کمپنیوں کو دیا جا رہا ہے۔

ایرانی حکام کے مطابق متعدد بار پراجیکٹ پر مذاکرات کے لیے بھارت کو دعوت دی گئی تاہم انہوں نے کچھ نہ کیا، گزشتہ سال انہیں اس حوالے سے الٹی میٹم بھی دیا گیا تھا۔

حکام کے مطابق وہ صرف پابندیاں اٹھنے کے منتظر تھے۔ اس کے بعد یہ منصوبہ مقامی کمپنیوں کو دینے کا فیصلہ کیا ہے۔

خلیج فارس کے قریب فرزاد میں گیس کی دریافت سنہ 2008 میں تین انڈین کمپنیوں نے کی تھی۔

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ ایرانی وزیر پیٹرولیم نے کہا کہ تھا کہ فرزاد بی گیس کا پہلا مرحلہ 2 ارب ڈالر کا ہے جس پر مستقبل قریب میں دستخط کیے جائیں گے۔ ایران اس سے قبل بھارت کو چابہار بندرگاہ کے ریل منصوبے سے بھی فارغ کر چکا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں