پیٹرول پمپس پر ملاوٹ والا پیٹرول فروخت کیے جانے کا انکشاف, وزارتِ تجارت کو شواہد پیش

مملکت سعودی عربیہ میں بعض پیٹرول پمپس پر ملاوٹ والا پیٹرول فروخت کیے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔

سعودی عرب کے بعض پیٹرول پمپس پر پیٹرول میں پانی کی ملاوٹ کی جا رہی ہے، متعدد سعودی شہریوں کی جانب سے اس سلسلے میں شکایات موصول ہو رہی ہیں۔

مقامی شہریوں نے بتایا ہے کہ انھوں نے پیٹرول اسٹیشنز پر کام کرنے والے بعض غیر ملکیوں کو پیٹرول میں پانی ملاتے ہوئے دیکھا ہے۔

بعض شہریوں کا کہنا ہے کہ انھیں پیٹرول کے ملاوٹی ہونے کا شبہ اس وقت ہوا جب پیٹرول بھروانے کے بعد گاڑی ہچکولے لینے لگی تھی۔

ایک اور مقامی شہری کا کہنا تھا کہ اس نے شک کی بنیاد پر اپنی گاڑی کا معائنہ کرایا تو معلوم ہوا کہ گاڑی میں خرابی کی وجہ ملاوٹ والا پیٹرول ہے۔

رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ کئی پیٹرول اسٹیشنز پر غیر معیاری اور ملاوٹ شدہ پیٹرول کی فروخت کے ثبوت ملے ہیں، اس سلسلے میں وزارتِ تجارت کو شواہد پیش کیے جائیں گے۔

یاد رہے کہ چند دن قبل وزارت تجارت نے ملاوٹی پیٹرول فروخت کرنے پر ایک بنگلا دیشی کارکن کے خلاف کارروائی کر کے اسے گرفتار کر لیا تھا، عدالت نے مجرم کو جرمانہ اور 6 ماہ قید کی سزا سنا دی تھی۔ حسین میا کچھ عرصے سے المجمعہ کے علاقے میں پیٹرول کے ساتھ ڈیزل ملا کر فروخت کر رہا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں