ایران اور روس کے درمیان دفاعی نظام کی خریداری کا معاہدہ

ایران میں تعینات روسی سفیر لیون زغاریان نے کہا ہے کہ ماسکو اور تہران حکومت کے درمیان دفاعی نظام کی خریداری کے معاہدے کو عملی جامع پہنائیں گے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق روس ایران کو دفاعی نظام S-400 فروخت کرے گا، اس سے قبل بھی تہران حکومت ماسکو سے S-300 کا دفاعی نظام حاصل کرچکی ہے۔
روسی سفیر کا کہنا تھا کہ اس معاہدے کی تکمیل میں کوئی رکاوٹ نہیں آنے دیں گے، ایران کو ایس 400 فضائی دفاعی نظام بیچنے میں کوئی حرج نہیں ہے، امریکی دباؤ کو کسی صورت خاطر میں نہیں لائیں گے۔

ایرانی اخبار سے گفتگو کرتے ہوئے لیون زغاریان نے کہا کہ روس کی جانب سے اس سے قبل بھی ایران کو ایس 300 پہنچایا گیا تھا، اسی طرح مذکورہ معاہدہ بھی پورا ہوگا۔

خیال رہے کہ امریکا نے ایران کے خلاف اقوام متحدہ کے اسلحے کی پابندی کو غیر معینہ مدت تک بڑھانے کی دھمکی دی ہے، جس پر تبصرہ کرتے ہوئے سفیر نے کہا ماسکو امریکی دباؤ میں نہیں گھبرائے گا۔

خیال رہے کہ 18 اکتوبر کو اقوام متحدہ کی پابندی ختم ہونے پر ایران روسی اسلحہ(دفاعی نظام) خریدے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں