مگرمچھ کو حکام کے حوالے کرنے کے لیے تاوان طلب مگر کتنا؟ جانیے خبر کی حقیقت

بھارت میں دیہاتیوں نے عجیب و غریب حرکت کر کے تاوان کے لیے مگر مچھ کو یرغمال بنا لیا۔

بھارتی ریاست اترپردیش کے ایک گاؤں کے رہائشیوں نے تالاب میں آنے والے ایک مگرمچھ کو حکام کے حوالے کرنے کے لیے تاوان مانگ لیا۔

ایک 8 فٹ لمبا مگرمچھ تالاب میں بہہ کر آ گیا تھا، جسے اترپردیش کے گاؤں مدیان میں دیہاتیوں نے پکڑ لیا، پہلے تو انھوں نے حکام کو اس کی اطلاع دی تاہم بعد میں انھوں نے حکام سے تاوان طلب کرنے کا منصوبہ بنا لیا۔

دیہاتیوں کا خیال تھا کہ انھیں مگرمچھ کے بدلے رقم مل جائے گی، محکمہ جنگلی حیات کے ایک اہل کار کا کہنا تھا کہ مقامی افراد نے مگرمچھ پکڑ کر اسے واپس کرنے کے لیے 50 ہزار روپے کا مطالبہ کیا تھا۔

حکام کے مطابق یہ مگر مچھ ریاست میں آنے والے سیلاب کے نتیجے میں گاؤں کے قریب واقع ٹائیگرز کی قدرتی پناہ گاہ سے اس تالاب میں پہنچ گیا تھا۔ محکمے کے اہل کار انیل پٹیل کا کہنا تھا کہ دیہاتیوں کو بڑی مشکل سے قائل کیا گیا، اور اس کے لیے مقامی انتظامیہ اور پولیس کی مدد بھی لینی پڑی۔

اہل کار کا کہنا تھا کہ دیہاتیوں کو قانونی کارروائی کی دھمکی بھی دی گئی اور انھیں بتایا گیا کہ اس جرم میں انھیں 7 سال تک قید بھی ہو سکتی ہے، وہ بڑی مشکل سے قائل ہو گئے اور انھوں نے مگرمچھ حوالے کر دیا جسے قریب واقع دریا میں چھوڑ دیا گیا۔

اہل کار نے بتایا کہ اس واقعے سے ثابت ہوتا ہے کہ لوگوں کو جنگلی حیات سے متعلق آگاہی کی فراہمی کی کتنی ضرورت ہے، انھیں یہ بھی معلوم نہیں تھا کہ جانوروں کے تحفظ کے قانون کی فہرست میں مگرمچھ بھی شامل ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں