کورونا وائرس، اٹلی کے وزیر اعظم دوران خطاب جذبات پر قابو نہ رکھ سکے

اطالوی وزیراعظم جوزیپے کونتے اٹلی میں کورونا سے ہونے والی اموات کے ذکر پر رو پڑے، درد بھرے الفاظ اور لڑکھڑاتی آواز میں خطاب کرتے ہوئے جذبات پر قابو نہ رکھ سکے۔

تفصیلات کے مطابق اٹلی میں کورونا وائرس کی تباہ کاریوں کے باعث وہاں کے حکمران بھی بے حد پریشان ہیں جس کا اندازہ اس بات سے لگایا جاسکتا ہے کہ گزشتہ روز اٹلی کے وزیر اعظم جوزیپے کونتے نے قوم سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ریاست آپ کی مدد کیلئے موجود ہے، آپ گھبرائیں نہیں بس گھروں میں رہیں، اسٹورز کے باہر لمبی لمبی قطاریں نہ بنائیں،۔

اٹلی کے وزیراعظم نے قوم سے درد بھرے الفاظ اور لڑکھڑاتی آواز میں خطاب کرتے ہوئے دعا کی کہ خدا ہمیں اس آفت سے نجات دے اور ہمیں اس آفت سے نمٹنے کی ہمت دے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ لاک ڈاؤن کے دوران سپرمارکیٹس،پبلک ٹرانسپورٹ اور میڈیکل اسٹورز کھلے رہیں گے، انہوں نے اشیائے ضروریہ بنانے والی صنعت کے علاوہ تمام فیکٹریاں بند کرنے کا اعلان بھی کیا۔

واضح رہے کہ اٹلی میں کوروناوائرس سے مزید651افراد ہلاک ہوچکے ہیں، غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اٹلی میں کورونا وائرس سے اموات کی تعداد اب تک 5476ہوگئی ہے جبکہ کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کی تعداد59ہزار138ہوگئی اس کے علاوہ اٹلی میں کورونا وائرس سے اب تک 7024افراد صحتیاب ہوچکے ہیں۔

واضح رہے کہ اٹلی میں کوروناوائرس سے مزید651افراد ہلاک ہوچکے ہیں، غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اٹلی میں کورونا وائرس سے اموات کی تعداد اب تک 5476ہوگئی ہے جبکہ کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کی تعداد59ہزار138ہوگئی اس کے علاوہ اٹلی میں کورونا وائرس سے اب تک 7024افراد صحتیاب ہوچکے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں