وزیراعظم اور کابینہ کا اپنے عہدے چھوڑنے کا اعلان مگر کیوں؟ اپنے استعفے صدر کو بھیج دیے

وزیراعظم اور کابینہ نے اپنے عہدے چھوڑنے کا اعلان کرتے ہوئے اپنے استعفے صدر کو بھیج دیے, بڑی خبر نے تہلکہ مچا دیا۔

روس کے وزیراعظم اور کابینہ نے اپنے عہدے چھوڑنے کا اعلان کرتے ہوئے اپنے استعفے صدر کو بھیج دیے، ولادی میر پیوٹن نے وزیراعظم کا استعفیٰ منظور کر کے کابینہ کی تشکیل نو تک موجودہ اراکین کو کام جاری رکھنے کی ہدایت کردی۔ روس کی سرکاری نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق روسی وزیر اعظم دمتری میدویدیو اور اُن کے ساتھ کابینہ میں موجود تمام لوگوں (حکومت) نے استعفے صدارتی ہاؤس ارسال کردیے۔

رپورٹ کے مطابق روسی صدر نے استعفے موصول ہونے کے بعد وزیر اعظم اور اُن کی کابینہ کے لیے تعریفی کلمات بھی ادا کیے۔ دمتری میدویدیو کو ولادی میر پیوٹن نے صدارتی سیکیورٹی کونسل کے ڈپٹی کے مطور پر نامزد کرتے ہوئے کابینہ کو ہدایت کی ہے کہ جب تک نئی کابینہ تشکیل نہیں دی جاتی تمام وزرا اپنے کام اسی طرح انجام دیتے رہیں۔

اس سے قبل روسی صدر نے بدھ کے روز اپنے خطاب میں پارلیمنٹ اور کابینہ کو مضبوط کرنے کے لیے آئین میں ترمیم کا عندیہ دیا تھا۔ اُن کا کہنا تھا کہ ترمیم کے بعد کابینہ اراکین کی تجاویز پر ہی صدر اور وزیراعظم کو نامزد کیا جائے گا۔

ولادی میر پیوٹن کا کہنا تھا کہ اس ترمیم سے پارلیمانی جماعتوں اور اراکین کی خود مختاری مزید بڑھ جائے گی، وزیراعظم بھی بااختیار ہوگا اور وہ آزادی کے ساتھ کام کرسکے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں