عراق میں امریکی فوجیوں کے زیراستعمال ایئربیس میزائل حملہ، ٹرمپ کی حالتِ غیر۔۔۔ امریکا میں خوف طاری

بغداد میں امریکی فوجی اڈے پر راکٹوں سے حملہ ہوا، امریکی فوجی اڈے پر راکٹ حملوں کے دوران چار افراد زخمی ہوئے جب کہ ایئربیس کو بھی نقصان پہنچا۔

عراق کے صوبے صلاح الدین میں امریکی فوجیوں کے زیر استعمال البلد ایئر بیس پر نامعلوم سمت سے میزائل داغے گئے، اس ایئربیس پر امریکی فوجی بھی مقیم ہیں اور فضائی کارروائیوں کے لیے اس بیس کو استعمال کرتے ہیں، حملوں میں چار افراد زخمی ہوئے اور جن میں سے دو زخمیوں کی حالت تشویشناک ہے جب کہ ایئربیس کو بھی نقصان پہنچا۔

ملٹری بیس پر موجود امریکی فوجیوں کی حتمی تعداد تاحال سامنے نہیں آسکی۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے نے امریکی حکام کے حوالے سے دعویٰ کیا کہ حملے کے وقت اس ایئربیس پر پندرہ امریکی فوجی اور ایک طیارہ موجود تھا جو مکمل طور پر محفوظ ہیں، کشیدگی کے بعد سے امریکی فوجیوں کو محفوظ مقام پر منتقل کر دیا گیا۔

مزید پڑھیں: حسن نصراللہ کا ایک بار پھر امریکا کو بڑی دھمکی، ڈونلڈ ٹرمپ حواس باختہ؟ امریکا میں ہلچل

واضح رہے کہ حزب اللہ کے سربراہ حسن نصراللہ نے امریکا کو خطے سے نکالنے تک جدوجہد جاری رکھنے کا اعلان کر دیا۔

 

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں