18 سال سے زائد خواتین کو حکومت کیجانب سے 35 دن کی مہلت، مگر کیوں؟

سعودی عرب کےمحکمہ سول افیئرز( احوال المدنیہ ) نےاٹھارہ سال سےزائد خواتین کوخبردارکیاہےکہ وہ اپنا شناختی کارڈ35 دن میں بنوالیں۔

غیرملکی خبر رساں ادارےکے مطابق سعودی حکومت نے 18 برس یااس سے زائد عمر کی خواتین کو متنبہ کیا ہے کہ 35روز کے اندر اپنا شناختی کارڈ جاری بنوالیں بصورت دیگر ان کے تمام سرکاری معاملات منجمد کر دیے جائیں گے۔

جو خواتین شناختی کارڈ حاصل نہیں کریں گی تواس مقررہ مدت کے بعدان کےتمام سرکاری معاملات منجمدکردیئےجائیں گے،اس کے علاوہ انہیں سرکاری اورنجی اداروں میں بھی کوئی سہولت فراہم نہیں کی جائےگی۔

سعودی کابینہ کی جانب سےکیےگئے فیصلے کے بعد اس پرعمل درآمد کےلیےتمام بلدیاتی کونسلز،ذیلی اداروں اوردیہاتوں میں قبیلوں کے سربراہوں کو حتمی تاریخ سے مطلع کر دیا گیا ہے۔

اس حوالے سے مملکت کی تمام شاخوں میں خواتین کے لیے شناختی کارڈ کے حصول کے لیے خصوصی طور پر دو شفٹوں میں کام جاری ہے۔

متعلقہ ادارے کاکہناہےکہ شعبہ خواتین کی جانب سے مملکت کی مختلف جامعات، کالجوں کے علاوہ سکولوں میں بھی شناختی کارڈ بنوانے کے لیے موبائل ٹیموں کااہتمام کیا گیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں