سعودی عرب میں طوفانی بارشیں، ہر طرف تباہی۔۔۔تفصیل صرف اس خبر میں 

سعودی عرب کے مختلف علاقوں میں طوفانی بارشوں نے نظامِ زندگی درہم برہم کر دیا۔ کئی وادیاں، نشیبی علاقے اور سڑکیں زیر آب آ گئی ہیں۔

سعودی پریس ایجنسی کے مطابق سوموار کو مکّہ، طائف، جدہ، رابغ، خلیص اور کئی دیگر علاقوں میں بھی گرج چمک کے ساتھ بارش ہوتی رہی۔ تفصیلات کے مطابق اتوار اور پیر کی درمیانی شب کو جدہ میں بارش شروع ہوئی جو اگلے روز بھی وقفے وقفے سے جاری رہی، جس کے باعث کئی سڑکیں زیر آب آ گئیں، اکثر مقامات پر سکولوں میں بچوں کو چھُٹی دے دی گئی۔

مکہ اور جدہ کے علاقے میں کئی گھروں میں بارش کا پانی داخل ہو گیا، جس کے باعث لوگوں کا کروڑوں ریال کا قیمتی سامان اور فرنیچر تباہ ہو گیا۔ کئی مقامات پر سڑکیں پانی سے بھر جانے سے گاڑیاں پھنس کر رہ گئیں۔

جبکہ راہگیروں کو بھی آمد و رفت میں شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ مکہ ریجن میں بھی کئی مقامات پر موسلادھار اور کہیں درمیانے درجے کی بارشیں وقتاً فوقتاً ہوتی رہیں جبکہ مطلع ابر تمام دِن ابر آلود رہا۔

کئی مقامات پرتیز ہواؤں سے درخت اور سائن بورڈ گر گئے۔وادیوں اور نشیبی علاقوں میں بھی بارش کے پانی سے سیلابی ریلوں کی صورت اختیار کر لی۔ میڈیا کے مطابق خلیص الدایر بنی مالک، بحرة، عشوان، جازان ریجن اور اس کی کمشنریوں ابو عریش، احد المسارحہ، الحرث، الدایر، الدرب، الریث، الطوال، العارضہ، فیفا اور ھروب میں بھی گزشتہ روز دن بھر بارش ہوتی رہی۔ کئی مقامات پر چٹانیں گرنے سے اہم مقامات کو مِلانے والی سڑکیں بند ہو گئیں۔

شدید بارش کے باعث محکمہ شہری دفاع نے ہنگامی صورتِ حال کا اعلان کر دیا گیا ہے۔ سعودی میڈیا کی جانب سے کہا گیا ہے کہ گزشتہ روز ہونے والی بارشوں نے جدہ میں گیارہ سال قبل آنے والے بھیانک سیلاب کی یاد دوبارہ سے کرا دی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں