11

سعودی عرب سے بڑی خبر۔۔۔خواتین کا میک اپ اور شناختی کارڈ؟ سب حیران!

سعودی سول افیئرز (الاحوال المدنیہ) کے ادارے نے خواتین کو شناختی کارڈ بنواتے وقت ایک اور اہم رعایت دے دی ہے، اب خواتین اپنی تصویر اُترواتے وقت ہلکا سا میک اپ بھی کر سکتی ہیں۔

سعودی اخبار مزمز کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ الاحوال المدنیہ نے خواتین کو شناختی کارڈ بنواتے وقت اس پر اپنی تصویر لگانے کی اجازت دے دی ہے، اور ایک اور اجازت یہ بھی ہے کہ وہ تصویر اُترواتے وقت ہلکا سا میک اپ کر سکتی ہیں، مگر اتنا گہرا میک اپ نہیں ہونا چاہیے کہ اُن کی شکل ہی بدل جائے۔

اصل شناخت برقرار رہنی چاہیے۔ یہ بات احوال المدنیہ کے ٹویٹر ہینڈ پر ایک خاتون کی جانب سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں بتائی گئی ہے۔ ایک خاتون نے سوال کیا تھا کہ کیا وہ میک اپ کر کے شناختی کارڈ کے لیے تصویر بنوا سکتی ہے تو اس پر ٹویٹر پر جواب دیا گیا تھا کہ ایسا کرنے پر کوئی پابندی نہیں ہے، خواتین ہلکا میک اپ کر کے تصویر اُتروا سکتے ہیں، تاہم یہ میک اپ اتنا زیادہ نہ ہو کہ ان کی اصل شکل بدل جائے۔

ایک اور خاتون کی جانب سے استفسار کیا گیا تھا کہ کیا شناختی کارڈ کے لیے تصویر بنواتے وقت سر کے بال ظاہر کیے جا سکتے ہیں تو اس پر ٹویٹر پر جواب دیا گیا کہ اس موقع کے لیے تصویر اُترواتے وقت لازمی ہے کہ خواتین اپنے سر کے بال رومال یا دوپٹے سے ڈھک کر رکھیں۔

انہیں بال دکھانے کی اجازت نہیں ہے۔ اسی طرح کارڈ کے لیے تصویر بنواتے وقت چشمہ یا کانٹیکٹ لینس استعمال کرنے کی اجازت نہیں ہے، کیونکہ اس سے چہرہ بالکل بدل جاتا ہے۔ واضح رہے کہ پہلے سعودی عرب میں شناختی کارڈ پر خواتین کی تصویر نہیں لگائی جاتی تھی۔ تصویر کے خانے میں ’خاتون‘ لکھا جاتا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں