اسٹاک مارکیٹ سے سرمایہ کار حضرات کے لیے بڑی خبر آگئی، جانیے تفصیلات

پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں مسلسل دوسرے روز کے دوران زبردست تیزی دیکھنے کو ملی، 100 انڈیکس 569.77 پوائنٹس بڑھ گیا۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان سٹاک مارکیٹ میں رواں ہفتے کے دوران زبردست تیزی دیکھنے کو مل رہی ہے، گزشتہ روز 480 پوائنٹس کی تیزی کے بعد دوسرا کاروباری روز بھی ٹریڈنگ کے دوران مثبت انداز دیکھنے کو ملا۔پورے کاروباری روز کے دوران کاروبار میں ایک موقع پر 40894.53 پوائنٹس کی سطح بھی دیکھی گئی۔

پورے کاروباری روز کے دوران مندی کے آثار نظر نہ آئے۔سٹاک مارکیٹ میں کاروبار کے اختتام پر 100 انڈیکس 569.77 پوائنٹس اضافے کے بعد 40862.59 پوائنٹس کی سطح پر پہنچ گیا، کاروبار میں تیزی کے باعث 6 حدیں بحال ہوئیں، بحال ہونے والی حدوں میں 40300، 40400، 40500، 40600، 40700 اور 40800 کی حدیں شامل ہیں۔

پورے کاروباری روز کے دوران انڈیکس میں 1.41 فیصد کی بہتری دیکھی گئی جبکہ 27 کروڑ 34 لاکھ 84 ہزار 257 شیئرز کا لین دین ہوا جس کے باعث سرمایہ کاروں کو ایک کھرب روپے کا فائدہ ہوا۔

دوسری جانب پاکستان کے تینوں بڑے آبی ذخائر تربیلا،منگلا اورچشمہ بھرنے کے قریب پہنچ گئے۔

تینوں ڈیموں کا بھرنا اس لئے بھی اہم ہے کہ رواں سیزن میں ساڑھے 30 لاکھ ایکڑ فٹ (ایم اے ایف) پانی کوٹری بیراج سے نیچے بہا کرسمندر کی نذر بھی کردیا گیا ہے۔ انڈس ریورسسٹم اتھارٹی(ارسا) کے ممبرراؤ ارشاد نے بتایا ہے کہ گزشتہ برس تینوں ڈیم مکمل نہ بھرنے کی وجہ سے یکم اکتوبر2019 کو ربیع سیزن شروع ہونے پرڈیموں میں کیری اوورذخائر صرف60 لاکھ ایکڑفٹ تھے ۔

جس کے باعث ربیع میں نہری پانی کی 49 فیصد تک قلت کا اندازہ لگایا گیا تھا۔ اس سال کیری اوورساڑھے 11 ایم اے ایف سے زائد ہوگا ۔ جس سے قلت کم ہوکر 20 فیصد تک رہنے کی توقع کی جاسکتی ہے ۔

تربیلا ڈیم بھرنے سے یکم ستمبر2020 کو جمع شدہ پانی 6 ایم اے ایف ،منگلا میں سطح 1240 فٹ ہونے پر7 اعشاریہ 35 ایم اے ایف جبکہ چشمہ بیراج کی جھیل میں 2 لاکھ 70 ہزار ایکڑ فٹ (صفراعشاریہ 27 ایم اے ایف) کے ساتھ مجموعی ذخائر 13 اعشاریہ 62 ایم اے ایف ہوں گے ۔

جن میں سے 30 ستمبر تک صوبوں کی ضرورت کے لئے 2 ایم اے ایف فراہم کرنے کے بعد 11 اعشاریہ 62 ایم اے ایف یکم اکتوبر کو شروع ہورہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں