سعودی عرب میں بادشاہ کی تبدیلی کی تیاریاں مکمل؟ ملک کی تاریخ کی سب سے بڑی خبر آگئی

ریاض(مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب میں دو معروف علماءسمیت 20افراد کو حکومت پر تنقید کرنے کے الزام میں گرفتار کر لیا گیا ہے۔ گرفتار ہونے والے علماءکے نام سلمان العودہ اور عود القرنی بتائے گئے ہیں۔ مڈل ایسٹ آئی کی رپورٹ کے مطابق ان افراد کی گرفتاریاں ایسے وقت پر سامنے آئی ہیں جب ملک میں افواہیں گردش کر رہی ہیں کہ سعودی فرماں روا شاہ سلمان، ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے حق میں بادشاہت سے دستبردار ہونے والے ہیں۔ذرائع کے مطابق گزشتہ 24گھنٹوں میں کریک ڈاﺅن میں گرفتار ہونے والوں میں شاہ فہد کا بیٹا شہزادہ عبدالعزیز بن فہد السعود بھی شامل ہے۔

عودہ نامی عالم حکومت پر شدید تنقید کرنے اور لوگوں کو حکومت کے خلاف اکسانے کے جرم میں 1994ءسے 1999ءتک قید کی سزا کاٹ چکے ہیں۔ عودہ کے پیروکاربڑی تعداد میں موجود ہیں اور ٹوئٹر پر بھی انہیں 1کروڑ40لاکھ لوگوں نے فالو کر رکھا ہے۔ ذرائع کے مطابق اس بار انہیں سعودی عرب اور قطر کے تنازع کے بارے میں ایک ٹویٹ کرنے پر گرفتار کیا گیا ہے۔اس ٹویٹ میں انہوں نے سعودی اور قطری حکام کے درمیان ہونے والی فون کال پر بات کی تھی جس کے منظرعام پر آنے کے بعد تنازعہ حل کی طرف جانے کی بجائے مزید سنگین ہو گیا ہے۔